PDA

View Full Version : وصل دوم فضائل غرر بطرز دگر



Attari1980
08-10-2009, 09:41 AM
وصل دوم فضائل غرر بطرز دگر !

جو تیرا طفل ہے کامل ہے یاغوث
طفیلی کا لقب واصل ہے یاغوث

تصوف تیرے مکتب کا سبق ہے
تصرف پر ترا عامل ہے یاغوث

تری سیر الی اللہ ہی ہے فی اللہ
کہ گھر سے چلتے ہی موصل ہے یاغوث

تو نور اول و آخر ہے مولیٰ
تو خیر عاجل و آجل ہے یاغوث

ملک کے کچھ بشر کچھ جن کے ہیں پیر
تو شیخ عالی و سافل ہے یاغوث

کتاب ہر دل آثار تعرف
ترے دفتر ہی سے ناقل ہے یاغوث

فتوح الغیب اگر روشن نہ فرمائے
فتوحات و فصوص آفل ہے یاغوث

ترا منسوب ہے مرفوع اس جا
اضافت رفع کی عامل ہے یاغوث

ترے کامی مشقت ہے بری ہیں
کہ برتر نصب سے فاعل ہے یاغوث

احد سے احمد اور احمد سے تجھ کو
کن اور سب کن مکن حاصل ہے یاغوث

تری عزت تری رفعت ترا فضل
بفضلہ افضل و فاضل ہے یاغوث

ترے جلوے کے آگے منطقہ سے
مہ و خور پر خط باطل ہے یاغوث

سیائی مائل اس کی چاندنی آئی
قمر کایوں فلک مائل ہے یاغوث

طلائے مہر بے ٹکسال باہر
کہ خارج مرکز حامل ہے یاغوث

تو برزخ ہے برنگ نون منت
دو جانب متصل واصل ہے یاغوث

نبی سے آخذ اور امت پر فائض
ادھر قابل ادھر فاعل ہے یاغوث

نتیجہ حد اوسط گر کے دے اور
یہاں جب تک کہ تو شامل ہے یاغوث

الا طوبی لکم ہے وہ کہ جن کا
شبانہ روز ورد دل ہے یاغوث

عجم کیسا عرب حل کیا حرم میں
جمی ہر جا تری محفل ہے یاغوث

ہے شرح اسم القادر ترا نام
یہ شرح اس متن کی حامل ہے یاغوث

جبیں جنہ فرسائی کا صندل
تری دیوار کی کہگل ہے یاغوث

بجالایا وہ امر سارعوا کہ
تری جانب جو مستعجل ہے یاغوث

تری قدرت تو فطریات سے ہے
کہ قادر نام میں داخل ہے یاغوث

تصرف والے سب مظہر ہیں تیرے
تو ہی اس پردے میں فاعل ہے یاغوث

رضا کا کام اور رک جائیں حاشا
ترا سائل ہے تو باذل ہے یاغوث