PDA

View Full Version : کیوں بارھویں پہ ہے سبھی کو پیار آ گیا



Attari1980
11-03-2009, 06:54 PM
کیوں بارھویں پہ ہے سبھی کو پیار آ گیا



کیوں بارھویں پہ ہے سبھی کو پیار آ گیا
آیا اسی دن احمد مختار آ گیا

گھر آمنہ کے سید ابرار آ گیا
خوشیاں مناؤ غمزدو غمخوار (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) آ گیا

جس وقت کوئی مرحلہ دشوار آ گیا
کام آمنہ کا دلبر و دلدار آ گیا

برسیں گھٹائیں رحمتوں کی جھوم جھوم کر
رحمت سراپاجب مرا سرادر (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) آ گیا

عرصہ جدائی کو ہوا اب تو بلائیے
پھر کاش رو رو کو کہوں سرکار (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) آ گیا

پہنچوں گا جب مدینے تو رو کر کہوں گا میں
بھاگا ہوا تیرا گناہ گار آ گیا

بار گناہ سر پر ہے آنکھوں میں اشک ہیں
بخشش کی آس لے کے گنہگار آ گیا

مجھ کو شفا دو یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) مرض گناہ سے
در پہ تمھارے عصیاں کا بیمار آ گیا

بیمار اپنے عشق کا مجھ کو بنائیے
یہ عرض لے کے در پہ میں سرکار آ گیا

کاسہ لئے امید کا سلطان دو جہاں
در پہ تمھارا طالب دیدار آ گیا

خالی نہ لوٹا کوئی بھی دربار سے کبھی
سلطان آیا یا کوئی نادار آ گیا

مجھ کو بھی اب تو شربت دیدار ہو عطا
کہ دم لبوں پہ یا شہہ ابرار آ گیا

غوث و رضا کاواسطہ سب کو بلائیے
طیبہ پہنچ کر سب کہیں دربار آ گیا

جوتے اتار لو چلو باہوش باادب
دیکھو مدینے کا حسین گلزار آ گیا

سر کو جھکا کے پڑھتے ہوئے درود
روتے ہوئے آگے بڑھو دربار آ گیا

اشکوں کے موتی اب نچھاور زائرو کرو
وہ سبز گنبد منبع انوار آ گیا

اے عاصیو اب دوڑ کر قدموں میں جا پڑو
وہ بےکسوں کا یاور مددگار آ گیا

اب مسکراتے آئیے سوئے گناہ گار
آقا (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) اندھیری قبر میں عطار آ گیا

عطار کو جو دیکھا اٹھا حشر میں یہ شور
دیکھو غلام سید ابرار(صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) آ گیا

Owais021
11-05-2009, 09:16 AM
:sub