PDA

View Full Version : حاجیوں کے بن رہے ہیں قافلے پھر یانبی (صلی ال&#



Attari1980
11-05-2009, 07:58 PM
حاجیوں کے بن رہے ہیں قافلے پھر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

حاجیوں کے بن رہے ہیں قافلے پھر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)
پھر نظر میں پھر گئے حج کے مناظر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

کر رہے ہیں جانے والے حج کی اب تیاریاں
رہ نہ جاؤں میں کہیں کر دو کرم پھر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

آہ ! پلے زر نہیں رخت سفر سرور نہیں
تم بلالو، تم بلانے پر ہو قادر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

کس قدر خوش تھا مجھے جب پیش آیا تھا سفر
مجھ کو اب کی بار بھی بلوائیے پھر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

دل مرا غمگین ہے اور جاں بھی ہے مضطرب
بہر پیر و مرشد اب بلوائیے پھر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

غم کے بادل چھا رہے ہیں آہ میرے قلب پر
حاضری کی دو اجازت مجھ کو تم پھر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

گنبد خضراء کے جلوے دیکھنے کب آؤں گا
کب تک اب تڑپاؤ گے مجھ کو آخر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

آپ ہی اسباب آقا پھر مہیا کیجئے
پھر دکھا دیجئے مدینے کے مناظر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

کس طرح تسکین دوں گا میں دل غمگین کو
رہ گیا حاضری سے میں جو قاصر یانبی) (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

مجھ پہ کیا گزرے گی آقا(صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) اس برس گر رہ گیا
میرا حال دل تو ہے سب تم پہ ظاہر یانبی(صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

آہ ! طیبہ سے اگر میں دور رہ کر مر گیا
روح بھی رنجور ہو گی کس قدر پھر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)
مثل سابق اس برس بھی کیجئے نظر کرم
میں گزشتہ سال پہنچا تھا بالاآخر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

جو مدینے کے لئے رہتے ہیں آقا بے قرار
ان کو بلواؤ طفیل عبدالقادر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

چاک سینہ چاک دل سوز جگر اور چشم تر
مجھ کو دے دو یہ خزینہ یہ جواہر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

یارسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) انظر حالنا للمرتضی
للحسین للحسن للعبدقادر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

بالیقیں قرآن عظمت پر تمھاری ہے گواہ
شاھد و قاسم ہو طیب ہو طاہر ہو یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

تم کو علم غیب اللہ نے عطا فرما دیا
کر دیا ہر جا پہ حاضر اور ناظر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

استقامت دین پر یامصطفٰے (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) کردو عطا
بہر خباب و بلال و آل یاسر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

آپ سب نبیوں میں افضل اور میں بدکار آہ !
عاصیوں میں ہوں یگانہ اور نادر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

عاصی و بدکار کے اپنے خدائے پاک سے
بخشوا دو سب صغائر اور کبائر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

بال بھی بیکا نہ میرا تو کوئی کر پائے گا
کیوں کر میرے تم ہو حامی اور ناصر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

تشنگان دید کو ہو دید کا شربت عطا
از طفیل غوث اعظم عبدالقادر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)

آہ ! میرا کیا بنے گا گر نہ حج پر جا سکا
ہو کرم عطار پر بہر رضا پھر یانبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)