PDA

View Full Version : حسین کا ہو کہی ذک



Attari1980
01-25-2010, 09:38 AM
حسین کا ہو کہی ذکر ، کوئی بات چلے
ہماری آنکھوں سے اشکوں کی اک برات چلے

فلک پہ کیوں نہ بھلا کربلا کی بات چلے
غمِ حسین میں تارے تمام رات چلے

مجسم اسوہ خیر الانام تھے شبیر
رضائے حق کے اشاروں پہ تا حیات چلے

ملی نہ بوند بھی پانی کی تشنہ کاموں کو
ہوائے قہر کے جھونکے سرِ فرات چلے

حسین حکم الہی سے کربلا آئے
بساط الٹ دی ہوئی دشمن کو مات چلے