PDA

View Full Version : جس کو چاہا میٹھے مدینے کا اس کو مہمان کیا



Attari1980
02-24-2010, 09:51 AM
جس کو چاہا میٹھے مدینے کا اس کو مہمان کیا

جس کو چاہا میٹھے مدینے کا اس کو مہمان کیا
جس پر نظر کرم فرمائی اس پر یہ احسان کیا

طالب دنیا نے تو طلب لندن کو کیا جاپان کیا
اور پسند دیوانوں نے طیبہ کا ریگستان کیا

جن کا ستارا چمکا ان کو طیبہ کا پیغام ملا
بختوروں نے در پر آ کر بخشش کا سامان کیا

شکر ادا ہو کیونکر تیرا کہ محبوب کی امت میں
مجھ سے نکمے کو بھی پیدا تو نے اے رحمٰن کیا

شاہ مدینہ دین کی دولت اپنی الفت بھی دی اور
اپنی غلامی مجھ کو عطا کی تو نے بڑا احسان کیا

دور جہالت تھا ہر سو جب کفر کا ڈنکا بجتا تھا
تم نے حیوانوں جیسے لوگوں کو بھی انسان کیا

حق کی راہ میں پتھر کھائے خوں میں نہائے طائف میں
دین کا کتنی محنت سے کام آپ نے اے سلطان کیا

جان کے دشمن کون کے پیاسوں کو بھی شہر مکہ میں
عام معافی تم نے عطا کی کتنا بڑا احسان کیا

رونا مصیبت کا مت رو تو پیارے نبی کے دیوانے
کرب و بلا والے شہزادوں پر بھی تو نے دھیان کیا

پیارے مبلغ معمولی سی مشکل پر گھبراتا ہے
دیکھ حسین نے دین کی خاطر سارا گھر قربان کیا

وہ دنیا کی رنگینی میں کھویا رہا برباد ہو
جس نے سوز عشق سے دل کو خالی اور ویران کیا

شاہ کو یہ معراج کی شب عطار بڑا اعزاز ملا
آپ http://www.faizeraza.net/forum/images/smilies/pbuh.gif نے تو چشمان سر سے دیدار رحمٰن کیا

آہ مقدر عرصہ ہوا عطار مدینے جا نہ سکا
ہائے مجھے حالات نے جکڑا یوں خون ارمان کیا